آسام مے سیٹزنشیپ دعووں کو لیکر بھارت کے سپریم کورٹ کا بدا فیصلہ

 05 Dec 2017 ( آئی بی ٹی این بیورو )
POSTER

بھارت کی سپریم کورٹ نے آسام میں شہریت کے دعوی کے حوالے سے ایک بڑا حکم دیا ہے. سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ گرام پنچیٹ سیکرٹری نے جاری سندی شہریت کا ثبوت ہے.

بھارت میں، سپریم کورٹ نے آسامی شہریت کے دعوی کے بارے میں کہا ہے کہ پنچیٹ سیکرٹری اور ایگزیکٹو مجاز کے ذریعہ جاری کردہ سرٹیفکیٹ کو استعمال کیا جاسکتا ہے کہ انہیں مناسب جانچ پڑتال کے بعد جاری کیا جارہا ہے.

سپریم کورٹ جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس آر ایف نیمین کے ایک بینچ نے گواہتی کے ہائی کورٹ کے حکم کو مسترد کردیا جس میں کہا گیا ہے کہ شہریت کی دعوی کرنے کے لئے یہ سرٹیفکیٹ غلط تھے.

سپریم کورٹ کے بینچ نے یہ بھی کہا کہ گرام پنچائٹری سیکرٹری نے جاری سندی شہریت فراہم کی ہے جس کے ذریعہ انہیں اپنے خاندان کی نسلوں کی وضاحت ہے.

سپریم کورٹ نے گواہتی کے ہائی کورٹ کے حکم کو چیلنج کرنے کی درخواستیں سنائی.

 

(Click here for Android APP of IBTN. You can follow us on facebook and Twitter)

Share This News

About sharing

اشتہار

https://www.ibtnkhabar.com/

 

https://www.ibtnkhabar.com/

Al Arabiya


https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/