روس یوکرین جنگ سے متاثرہ افریقیوں کی پوتن مدد کریں : افریقی یونین کے سربراہ

 04 Jun 2022 ( آئی بی ٹی این بیورو )
POSTER

افریقی یونین کے سربراہ نے روس کے ساتھ ملاقات میں صدر ولادیمیر پیوٹن سے کہا ہے کہ افریقی ممالک یوکرین کی جنگ کا بے گناہ شکار ہیں اور روس ان کی مشکلات کم کرنے میں مدد کرے۔

سوچی میں دونوں رہنماؤں کے درمیان بات چیت کے بعد افریقی یونین کے سربراہ میکی سال نے کہا کہ روسی رہنما نے اناج اور کھاد کی برآمدات میں آسانی پیدا کرنے کا وعدہ کیا۔ تاہم یہ تفصیلات نہیں بتائی گئی ہیں کہ یہ کیسے ہوگا۔

پوٹن اس بات کی تردید کرتا رہا ہے کہ روس یوکرین کی بندرگاہوں کو اناج کی برآمد سے روک رہا ہے۔

افریقہ میں 40 فیصد سے زیادہ گندم عام طور پر روس اور یوکرین سے آتی ہے۔

لیکن روس اور یوکرین کے درمیان 24 فروری 2022 کی جنگ کے بعد سے بحیرہ اسود میں یوکرین کی بندرگاہوں کو برآمدات کے لیے بڑی حد تک روک دیا گیا ہے۔

یوکرین اور اس کے اتحادی روس پر بندرگاہوں کو روکنے کا الزام لگاتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے کرائسس کوآرڈینیشن کے رکن امین عواد نے جنیوا میں کہا، "اگر یہ بندرگاہیں نہیں کھلیں گی تو اس کا نتیجہ قحط کی صورت میں نکلے گا۔"

انہوں نے کہا کہ خوراک کی کمی 1.4 بلین لوگوں کو متاثر کر سکتی ہے اور بڑے پیمانے پر نقل مکانی کا باعث بن سکتی ہے۔

روس اور یوکرین کے درمیان جنگ کے آغاز کے بعد سے براعظم افریقہ میں خوراک کی قیمتوں میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے، جس سے لوگوں کی بڑی تعداد فاقہ کشی کا شکار ہے۔

ورلڈ فوڈ پروگرام کے سربراہ مائیک ڈنفورڈ نے کہا کہ افریقہ میں 80 ملین سے زائد افراد کو شدید غذائی عدم تحفظ کا سامنا ہے جس کی وجہ سے انہیں کھانا کھلانا مشکل ہو گیا ہے۔ سال 2021 میں یہ تعداد تقریباً 5 کروڑ تھی۔

افریقی ملک چاڈ نے قومی فوڈ ایمرجنسی کا اعلان کر دیا ہے۔ اقوام متحدہ کے مطابق ملک کی ایک تہائی آبادی کو خوراک کی امداد کی ضرورت ہے، چاڈ کی حکومت بین الاقوامی امداد کی اپیل کر رہی ہے۔

 

(Click here for Android APP of IBTN. You can follow us on facebook and Twitter)

Share This News

About sharing

اشتہار

https://www.ibtnkhabar.com/

 

https://www.ibtnkhabar.com/

Al Arabiya


https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/

https://www.ibtnkhabar.com/